ملیے ﮨﺎﺗﮭﻮﮞ ﺳﮯ ﻣﺤﺮﻭﻡ ﺍﺳﻨﻮﮐﺮ ﭘﻠﺌﯿﺮ سے

نیوز ڈیسک

ﭘﯿﺪﺍﺋﺸﯽ ﻃﻮﺭ ﭘﺮ ﺩﻭﻧﻮﮞ ﮨﺎﺗﮭﻮﮞ ﺳﮯ ﻣﺤﺮﻭﻡ ﭘﻨﺠﺎﺏ ﮐﮯ ﭨﺎﺅﻥ ﺳﻤﻨﺪﺭﯼ ﮐﮯ 32 ﺳﺎﻟﮧ ﻧﻮﺟﻮﺍﻥ ﻣﺤﻤﺪ ﺍﮐﺮﺍﻡ ﻧﮯ ﺗﮭﻮﮌﯼ ﺳﮯ ﺍﺳﻨﻮﮐﺮ ﮐﮭﯿﻞ ﮐﺮ ﺍﭘﻨﯽ شاندار پرفارمنس ﺳﮯ ﺳﺐ ﮐﻮ ﺣﯿﺮﺍﻥ ﮐﺮﺩﯾﺎ

تفصیلات کے مطابق ﺍﭘﻨﯽ ﻣﻌﺬﻭﺭﯼ ﮐﻮ ﺷﮑﺴﺖ ﺩﮮ ﮐﺮ ﺍﺳﻨﻮﮐﺮ ﻣﯿﮟ ﺍﭘﻨﯽ ﭘﮩﭽﺎن ﺑﻨﺎﻧﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﻣﺤﻤﺪ ﺍﮐﺮﻡ ایک ﻏﺮﯾﺐ ﮔﮭﺮﺍﻧﮯ ﻣﯿﮟ ﭘﯿﺪﺍ ﮨﻮﺋﮯ۔ غربت کے باعث ﮐﺒﮭﯽ ﺍﺳﮑﻮﻝ ﮐﯽ ﺷﮑﻞ ﻧﮧ ﺩﯾﮑﮭﻨﮯ ﻭﺍﻟﮯ ﺍﮐﺮﺍﻡ ﻧﮯ ﻧﻮﻋﻤﺮﯼ ﻣﯿﮟ ﻣﻘﺎﻣﯽ ﺍﺳﻨﻮﮐﺮ ﮨﺎﻝ ﻣﯿﮟ ﮐﮭﻼﮌﯾﻮﮞ ﮐﻮ ﺩﯾﮑﮭﻨﺎ ﺷﺮﻭﻉ ﮐﯿﺎ ﺟﺲ سے ﺍﻥ ﮐﮯ ﺩﻝ ﻣﯿﮟ ﺍﺳﻨﻮﮐﺮ ﮐﮭﯿﻠﻨﮯ ﮐﯽ ﺧﻮﺍﮨﺶ ﮐﻮ ﺟﻨﻢ لیا

اکرام نے ﺍﭘﻨﮯ ﺷﻮﻕ ﮐﻮ ﻋﻤﻠﯽ ﺟﺎﻣﮧ ﭘﮩﻨﺎﻧﮯ کے لیے پہلے پہل ﺧﻔﯿﮧ ﻃﻮﺭ ﭘﺮ ﺍﺳﻨﻮﮐﺮ ﮐﮭﯿﻠﻨﮯ ﮐﯽ ﭘﺮﯾﮑﭩﺲ ﺷﺮﻭﻉ ﮐﯽ۔ ﺍﮐﺮﺍﻡ ﮐﮯ ﻣﻄﺎﺑﻖ ﺷﺮﻭﻉ ﺷﺮﻭﻉ ﻣﯿﮟ ﺧﺎﻟﯽ ﭘﻮﻝ ﭨﯿﺒﻞ ﭘﺮ ﮔﯿﻨﺪﻭﮞ ﮐﻮ ﺧﻮﺩ ﮨﯽ ﺩﮬﮑﺎ ﺩﯾﺘﺎ ﺗﮭﺎ، ﺁﮨﺴﺘﮧ ﺁﮨﺴﺘﮧ ﻣﯿﮟ ﻧﮯ ﺍﭘﻨﮯ ﮐﮭﯿﻞ ﮐﻮ ﺑﮩﺘﺮ ﺑﻨﺎﯾﺎ ﺍﻭﺭ ﺩﻭﺳﺮﻭﮞ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﮐﮭﯿﻠﻨﺎ ﺷﺮﻭﻉ ﮐﯿﺎ

ہاتھوں سے محروم باصلاحيت ﺍﮐﺮﺍﻡ ﺍﺏ ﺷﮩﺮ ﮐﮯ ﺑﮩﺘﺮﯾﻦ ﮐﮭﻼﮌﯾﻮﮞ ﮐﻮ ﭼﯿﻠﻨﺞ ﮐﺮنے کے قابل ﮨﯿﮟ، ﺍﮮ ﺍﯾﻒ ﭘﯽ ﮐﯽ ﭨﯿﻢ ﮐﮯ ﺳﺎﺗﮫ ﺍﺳﻨﻮﮐﺮ ﮨﺎﻝ ﻣﯿﮟ ﺍﮐﺮﺍﻡ ﻧﮯ ﺑﮩﺖ ﺳﺎﺭﮮ ﺷﺎﭨﺲ ﮐﺎ ﻣﻈﺎﮨﺮﮦ ﮐﺮ ﮐﮯ ﺑﮭﯽ ﺩﮐﮭﺎﯾﺎ، ﺟﺲ ﭘﺮ ﮨﺎﻝ ﺗﺎﻟﯿﻮﮞ ﺳﮯ ﮔﻮﻧﺞ ﺍﭨﮭﺎ

ﺍﮐﺮﺍﻡ کا کہنا ہے کہ وہ ﺣﮑﻮﻣﺖ ﮐﯽ ﺳﭙﻮﺭﭦ ﺳﮯ ﺑﯿﻦ ﺍﻻﺍﻗﻮﺍﻣﯽ ﺳﻄﺢ ﭘﺮ ﭘﺎﮐﺴﺘﺎﻥ ﮐﯽ ﻧﻤﺎﺋﻨﺪﮔﯽ ﮐﺮﻧﮯ ﮐﮯ ﺧﻮﺍﮨﺸﻤﻨﺪ ﮨﯿﮟ.

Related Articles

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Check Also
Close
Back to top button
Close
Close